طرززندگی

ٹوتھ برش کاانتخاب کیسے کریں۔تجاویز اوراحتیاطی تدابیر

How to choose Toothbrush

 

ٹوتھ برش کاانتخاب کیسے کریں۔تجاویز اوراحتیاطی تدابیر

ٹوتھ برش کے بغیر صبح کا آغاز اوررات کا اختتام ادھوراسالگتاہے۔منہ کی صحت کی بات ہواوردانتوں کاذکرنہ ہوایساتوہوہی نہیں سکتا۔ منہ کی صحت میں ٹوتھ پیسٹ سے زیادہ ٹوتھ برش اہم کردارادا کرتاہے۔ جولوگ اس حقیقت سے ناواقف ہیں وہ برش سے زیادہ ٹوتھ پیسٹ کواہمیت دیتے ہیں۔
دانتوں کی صفائی کے لئے صرف ایک اچھاٹوتھ پیسٹ ہی نہیں بلکہ برش کادرست انتخاب زیادہ ضروری ہے۔اگربرش دانتوں کی بہتر صفائی کرنے سے قاصر ہوگاتو بیماریاں خودبخود آپ پرحملہ آور ہونگی۔

ٹوتھ برش کا انتخاب کیسے کریں

آپ کے ٹوتھ برش میں ٹارٹر اورجراثیم کاخاتمہ کرنے کی صلاحیت موجودہونی چاہئے۔برش کے انتخاب میں مندرجہ ذیل باتوں کاخیال رکھیں:

سائزکاخیال رکھیں

برش کاسائز ایساہوناچاہئے جوآپ کے دانتوں کی بہتر طورپرصفائی کرسکے۔ بچوں کے لئے بڑے سائز کے برش لینے سے گریز کریں۔اگربرش کاسائز بڑاہوگاتووہ آپ کے دانتوں کی صحت کے لئے نقصان دہ ثابت ہوسکتاہے۔

ڈاکٹرسے مشورہ ضرور لیں

اس سلسلے میں ڈاکٹرز کامشورہ نہایت اہمیت کاحامل ہے۔آپ کے دانتوں کے حساب سے آپ کے لئے کون سابرش مناسب ہے اس بات کامشورہ ڈینٹسٹ سے بہتر آپ کوکوئی نہیں دے سکتاکیونکہ وہ آپ کے دانتوں کی کنڈیشن سے بخوبی آگاہ ہوتے ہیں۔

برش کے ریشے نرم ہونے چاہئے

برش کے ریشے نرم اورآرام دہ ہوناضروری ہیں۔خیال رکھیں کے کہیں آپ کے برش کے ریشے جھڑتونہیں رہے تاکہ وہ دانتوں کونقصان پہنچانے کے بجائے ان کی صفائی بہتر طورپرکرے۔اگربرش کے ریشے سخت ہوں تو وہ مسوڑھوں کوان کی جگہ سے ہٹانے کاسبب بنتے ہیں۔

برش ہرتین ماہ میں تبدیل کریں

وقت کے ساتھ ساتھ برش کے ریشے اپنی پائیداری کھودیتے ہیں اسی لئے ماہرین کے مطابق اگرآپ چاہتے ہیں کہ برش اپناکام مناسب طریقے سے کرے تو برش ہرتین سے چارماہ میں ضرور تبدیل کریں۔

ٹوتھ برش آرام سے کریں

برش کوایسے پکڑیں جیسے آپ پینسل پکڑتے ہیں۔دانتوں کے اوپری حصے پرجہاں دانت مسوڑھوں سے جڑے ہوتے ہیں سرکولرموشن میں بالکل آہستہ آہستہ دانتوں کو صاف کریں۔دانتوں کے درمیانے حصے کی صفائی یقینی بنائیں۔دانتوں کے ساتھ ساتھ زبان اورمنہ کے دیگرحصوں کی صفائی کابھی خاص خیال رکھیں۔

برش کاانتخاب اورمنہ کی صحت

اگرآپ کابرش ٹھیک نہ ہوتو دانتوں پرپلاک جمع ہوکرمسوڑھوں کی سوجن اورسوزش کاباعث بنتاہے جس سے دانتوں کے نقصان کااندیشہ ہوتاہے۔ان تمام مسائل کاحل نہ نکالاجائے تو یہ دائمی انفیکشن کاسبب اورمنہ کی صحت کی خرابی کی وجہ بنتے ہیں۔اس طرح کے امراض جسمانی نظام پربری طرح اثرانداز ہوتے ہیں۔جس سے جان لیوا امراض کاخطرہ بڑھ جاتاہے۔

دانتوں کی صفائی میں مندرجہ ذیل احتیاطی تدابیر اختیارکریں

دن میں کم از کم دوبار ضروردانت صاف کریں۔
زیادہ زوراورسختی سے برش کرنے سے گریز کریں۔
برش کے ریشے نرم وملائم ہوں تاکہ دانتوں کونقصان نہ پہنچے۔
آپ چاہے جتنا بھی جلدی میں ہوں کم ازکم دومنٹ تک برش کریں۔
مسوڑھوں کے نقصان سے بچنے کے لئے آپ ٹوتھ برش کوپنسل یاقلم کی طرح پکڑیں۔

Leave a Comment